FREE SHIPPING | On order over Rs. 1000 within Pakistan

گمشدہ اسلامی تاریخ | Lost Islamic History | Firas Alkhateeb 

In Stock Unavailable

sold in last hours

Regular price Rs.975.00 Rs.999.00 |  Save Rs.24.00 (2% off)

-2

Spent Rs. more for free shipping

You have got FREE SHIPPING

ESTIMATED DELIVERY BETWEEN and .

PEOPLE LOOKING FOR THIS PRODUCT

PRODUCT DETAILS

گمشدہ اسلامی تاریخ
مسلم تہذیب کے ماضی کی بازیافت

 

 فیراث الخطیب کی کتاب

Lost Islamic History

کا اردو ترجمہ 

.

عمران خان کی تجویز کردہ کتاب کی خاص بات

مغرب میں مورخین اور محققین نے اسلامی تاریخ کے ہر باب پر درجنوں کتابیں لکھی ہیں اور ان کتابوں اورمقالوں کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔ پھر آخر آکسفورڈ کے تحصیل یافتہ عمران خان نے پاکستانی نوجوانوں کو اس کتاب کے پڑھنے کا مشورہ کیوں دیا؟ یہ جاننے کے لیے کتاب پڑھنا ضروری ہے۔

کتاب میں چودہ صدیوں کی مسلم تاریخ کو 12 ابواب اور ایک سو 67 صفحات میں اختصار کے ساتھ عام فہم زبان میں سمو دیا گیا ہے۔

اس کتاب کی ایک خاص بات یہ ہے کہ اس میں مسلمانوں کی عسکری فتوحات کے علاوہ علمی اور فکری ارتقا پر بھی بحث کی گئی ہے۔

مصنف نے مشرق وسطیٰ اور مسلم اقتدار والے خطوں کے علاوہ ان خطوں میں مسلم موجودگی کا احاطہ کرنے کی بھی کوشش کی ہے جہاں مسلمانوں نے فوج کشی نہیں کی۔

اس کے علاوہ افریقہ سے برآمد کردہ مسلمان غلام جنھیں 16ویں صدی سے 19ویں صدی تک لاطینی اور شمالی امریکہ میں لا کر فروخت کیا گیا، ان کی تاریخ کا احاطہ کرنے کی بھی کوشش کی گئی ہے۔ 

 

فراس الخطیب کہتے ہیں کہ وزیراعظم عمران خان کے اس مشورے پر انہیں خوشگوار حیرت ہوئی ہے۔

’یہ میرے لیے ایک اعزاز کی بات ہے کہ انہوں نے میری کتاب پڑھی اور اسے تجویز کیا۔‘

فراس کا کہنا ہے کہ عمران خان کے بیان کے بعد ایمیزون پر کتاب کی فروخت میں اتنی تیزی آئی کہ تمام پرنٹ کاپیاں فوری فروخت ہو گئیں۔

تاہم انٹرنیٹ پر موجود کتاب کی پی ڈی ایف بغیر اس کی قیمت ادا کیے پڑھنے والوں کے لیے ان کا کہنا تھا کہ لوگوں کو یہ سوچنا چاہیے کہ ’انھوں نے حالیہ دنوں میں تفریح پر کتنا خرچ کیا ہے؟ کیا ان کے نزدیک یہ (تفریح) اس کتاب کے مواد سے زیادہ قیمتی ہے؟ یہ میری سالوں کی محنت ہے جسے اس سرقے / piracy کی وجہ سے نقصان پہنچ رہا ہے۔‘

مصنف کے بارے میں

مصنف فراس الخطیب امریکی ریاست کیلیفورنیا میں فلسطینی والدین کے گھر پیدا ہوئے۔

ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے بی اے کی تعلیم کے دوران اسلامی تاریخ کا مطالعہ کیا۔ آج کل وہ عثمانوی سلطنت کی فکری (انٹلیکچوئل ) تاریخ پر پی ایچ ڈی کر رہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ دارالقاسم نامی ایک ادارے میں اسلامی تاریخ پڑھا رہے ہیں۔

مصنف کو کتاب لکھنے کا خیال کیوں آیا؟

ان کا کہنا ہے کہ بی اے کے بعد وہ پانچ سال تک ایک ہائی سکول میں اسلامی تاریخ پڑھاتے رہے۔

یاد رہے کہ امریکی ہائی سکول میں اسلامی تاریخ ایک اختیاری مضمون ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ان کے طلبہ میں بڑی تعداد میں مسلم ممالک سے آئے والدین کے بچے ہوتے تھے جن میں فرسٹ جنریشن (امیگرنٹس کے وہ بچے جوامریکا میں پیدا ہوں فرسٹ جنریشن کہلاتے ہیں) امریکی ہوتے تھے۔ ان کے طلبہ کے والدین کا تعلق متنوع جغرافیائی خطوں سے تھا جن میں پاکستان، نائیجریا، فلسطین، شام، امریکہ اور دیگر ممالک شامل تھے۔

اس کا لازمی نتیجہ یہ ہوتا تھا کہ طلبہ میں مزید جاننے کی خواہش پیدا ہوتی۔ زیر نظر کتاب اس ضرورت کو پورا کرنے کے لیے لکھی گئی۔

کتاب کس قاری کو سامنے رکھ کر لکھی گئی ہے؟

لیکن فراس نے دیباچے میں واضح کیا ہے کہ ہائی سکول کے طلبہ کے لیے لکھی جانے والی یہ کتاب ایک طرح کا ’جمپنگ پیڈ‘ (یعنی وہ مقام جہاں سے کسی کام کا آغاز کیا جاتا ہے) ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ اسلامی تاریخ تفصیل سے پڑھنے کے خواہش مند ببلیوگرافی یعنی فہرست کتب کی مدد سے مزید تفتیش کا آغاز کر سکتے ہیں۔ 

اس کے گیارہ ابواب 

1۔ اسلام سے پہلے کا جزیرہ نمائے عرب

2۔حضرت محمدؐ کی حیاتِ طیبہ

3۔خلفائے راشدین کا دور

4۔اسلامی ریاست کا قیام

5۔اسلام کا انٹلکچوئل سنہری دور

6۔اکھاڑ پچھاڑ

7۔اندلس (سپین)

8۔اسلام کی برتری

9۔نشاۃ ثانیہ

10۔زوال

11۔قدیم و جدید افکار


Gumshuda Islami Tareekh

Urdu Translation of

Lost Islamic History

by 

Firas-Alkhateeb

Recently Viewed Products

گمشدہ اسلامی تاریخ | Lost Islamic History | Firas Alkhateeb 

Returns

There are a few important things to keep in mind when returning a product you have purchased from Dervish Online Store:

Please ensure that the item you are returning is repacked with the original invoice/receipt.

We will only exchange any product(s), if the product(s) received has any kind of defect or if the wrong product has been delivered to you. Contact us by emailing us images of the defective product at help@dervishonline.com or calling us at 0321-8925965 (Mon to Fri 11 am-4 pm and Sat 12 pm-3 pm) within 24 hours from the date you received your order.

Please note that the product must be unused with the price tag attached. Once our team has reviewed the defective product, an exchange will be offered for the same amount.


Order Cancellation
You may cancel your order any time before the order is processed by calling us at 0321-8925965 (Mon to Fri 11 am-4 pm and Sat 12 pm-3 pm).

Please note that the order can not be canceled once the order is dispatched, which is usually within a few hours of you placing the order. The Return and Exchange Policy will apply once the product is shipped.

Dervish Online Store may cancel orders for any reason. Common reasons may include: The item is out of stock, pricing errors, previous undelivered orders to the customer or if we are not able to get in touch with the customer using the information given which placing the order.


Refund Policy
You reserve the right to demand replacement/refund for incorrect or damaged item(s). If you choose a replacement, we will deliver such item(s) free of charge. However, if you choose to claim a refund, we will offer you a refund method and will refund the amount in question within 3-5 days of receiving the damaged/ incorrect order back.

What are you looking for?

Your cart